خیبر پختونخوا اسمبلی کے سامنے شادی ہالز مالکان کا احتجاجی مظاہرہ

0
9

خیبر پختونخوا اسمبلی کے سامنے شادی ہالز مالکان کا احتجاجی مظاہرہ

خیبر پختونخوامیں 600 ، پشاور میں 170 رجسٹررڈ اورغیر رجسٹرد شادی ہال ویران ہیں۔صدر شادی ہالز ایسوسیشن خالد ایوب

 خیبرپختونخواشادی ہالز ایسوسی ایشن کا حکومت سے شادی ہالزکھولنے کا مطالبہ۔

صدر شادی ہالز ایسوسی ایشن خالد ایوب نے کھا کے بازارسمیت تمام شعبے کھول دئے لیکن شادی ہالز کو اجازت نہیں دی جارہی۔

ایس او پیز کے تحت شادی ہالز کھولنے والوں نے خود مظاہرے میں ایس او پیز کی دھجیاں اڑا دی، مظاہرے میں سینکڑوں کی تعداد میں لوگ موجودسماجی فاصلوں سمیت ایس او پیز پر عمل درامد نہیں ہو رہا


Wedding hall owners protest in front of Khyber Pakhtunkhwa Assembly

600 in Khyber Pakhtunkhwa, 170 registered and unregistered wedding halls in Peshawar are deserted. President Wedding Halls Association Khalid Ayub

Khyber Pakhtunkhwa Marriage Halls Association demands government to open marriage halls.

President of wedding halls Association Khalid Ayub said that Government opened all the departments including markets but Wedding Halls are not being allowed.

Those who opened marriage halls under SOPs themselves blew up the SOPs in the protest in front of Khyber Pakhtunkhwa Assembly. Hundreds of people were present in the protest but SOPs including social distances are not being implemented.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here